Friday , September 17 2021

پوزیشن کی طرح نیب کو برا بھلا نہیں کہونگا ،اپوزیشن کا احتساب ہورہا ہے تو ساتھ حکومتی وزرا کا بھی ہونا چاہیے ،غلام سرور خان

اعتماد نیوز

اسلام آباد: وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی طرح نیب کو برا بھلا نہیں کہونگا ،اپوزیشن کا احتساب ہورہا ہے تو ساتھ حکومتی وزرا کا بھی ہونا چاہیے ،جو 3 مرتبہ وزیراعظم ، 4 مرتبہ وزیراعلیٰ بنے ان سب کا احتساب ہونا چاہیے، جہاں ملک میں فرنٹ لائن پر ڈاکٹرز موجود ہیں وہیں سیکنڈ فرنٹ لائن ایوی ایشن ڈویژن تھا۔

جمعہ کوقومی اسمبلی کے اجلاس سے اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے ہوابازی ملک غلام سرور نے کہا کہ اس وقت دنیا کورونا وائرس کا مقابلہ کررہی ہے 3 لاکھ کے قریب اموات ہوچکی ہیں اور 40 لاکھ سے زیادہ لوگ اس موذی مرض کا شکار ہوچکے ہیں۔

غلام سرور نے کہا کہ پاکستان خطے کا وہ ملک ہے جہاں کم ترین سطح پر 37 ہزار لوگ اس سے متاثر ہوچکے ہیں اور اس سے جاں بحق ہونے والے افراد کی مغفرت کی دعا کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا اس مرض کا شکار ہوئی اور اس کے ساتھ ہی دنیا بھر میں اندرون و بیرون ملک فضائی آپریشنز معطل کیے گئے، پاکستان نے 21 مارچ کو فضائی آپریشن بند کیا تھا تاہم بیرون ملک پھنسے لگ بھگ ایک لاکھ پاکستانی تھے جن میں عمرہ زائرین، زیارتوں پر جانے والے، تبلیغی جماعتوں سے وابستہ افراد، قیدی اور طلبہ تھے اس حوالے سے ہم پر دباؤ تھا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے بیرون ملک فضائی آپریشن شروع کیا اور ہماری اولین ترجیح وہ پاکستانی تھے جو وزٹ ویزا پر تھے یا مدت ختم ہوگئی تھی، جنہیں ملازمتوں سے نکال دیا گیا تھا، وہ طلبہ جن کی یونیورسٹیز بند ہوگئی تھیں۔

غلام سرور نے کہا کہ عمان اور امریکا سے قیدیوں کو بلا معاوضہ وطن واپس لایا گیا، سوڈان، کینیا اور تنزانیہ میں موجود تبلیغی افراد اور دیگر ممالک سے طلبہ کو وطن واپس لایا گیا۔وفاقی وزیر ہوا بازی نے کہا کہ جہاں ملک میں فرنٹ لائن پر ڈاکٹرز موجود ہیں وہیں سیکنڈ فرنٹ لائن ایوی ایشن ڈویژن تھا، اب تک ہماری 16 شہادتیں ہوچکی ہیں ہم انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں، ہم نے کوئی کمزوری نہیں دکھائی۔


About

Skip to toolbar