Monday , May 17 2021

ریلوے کا سسٹم کرپٹ ہوچکا، فوری اوورہالنگ اور ملازمیں کی چھانٹیاں کریں، سپریم کورٹ کا حکم

اعتماد نیوز

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے ریلوے میں مکمل اوور ہالنگ اور ملازمین کے چھانٹیوں کا حکم دے دیا۔

جمعہ کو چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے دو رکنی بینچ نے ریلویز ملازمین کی سروس مستقلی کے حوالے سے دائر مختلف درخواستوں پر سماعت کی۔عدالت نے ایک ماہ میں ریلوے سے متعلق آپریشن اور ملازمین کی تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

سیکرٹری ریلوے عدالت میں پیش ہوئے تو چیف جسٹس نے ان پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ سے ریلوے نہیں چل رہی ہے، پرسوں جو نقصان ہوا بتا دیں اس کی ذمہ داری کس کی ہے، ٹرین یا جہاز کا حادثہ کوئی مذاق نہیں، ریلوے کا سسٹم کرپٹ ہوچکا ہے۔

سپریم کورٹ نے ریلوے میں مکمل اوور ہالنگ اور ملازمین کے چھانٹیوں کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ ریلوے میں نااہل افراد بھرے پڑے ہیں، ملازمین خود اپنے محکمے کے ساتھ وفادار نہیں، ریلوے آئے روز حادثات کا شکار ہوتی ہے جس سے بھاری جانی و مالی نقصان ہوتا ہے، ان حادثات کی نہ کوئی رپورٹ ہے اور نہ عملدرآمد، لہذا ریلوے فوری طورپراپنا اصلاحاتی عمل شروع کرے اور غیر ضروری و نااہل ملازمین کی چھانٹی کرے۔


About

Leave Comment

Skip to toolbar