Wednesday , July 15 2020

سکھوں کو مذہبی رسومات ادا کرنے کے لیے پاکستان نے کرتارپور گردوارہ کھول دیا

اعتماد نیوز

لاہور: کورونا کی وباء کی وجہ سے بند کرتارپور گرد وارہ ساڑھے 3 ماہ بعد کھول دیا گیا، پہلے روز ملک بھر سے ياتريوں نے ايس او پيز پر عملدارآمد کرتے ہوئے حاضری دی، اور مذہبی رسومات ادا کيں۔

میڈیا کے مطابق حکومت نے تمام ایس او پیز کے ساتھ سکھوں کا اہم ترین مذہبی مقام کرتار پور گردوارہ کھول دیا، کرونا وائرس کی وباء کے باعث دنیا بھر میں آمد و رفت محدود کردی گئی تھی، احتیاطی تدابیر کے طور پر پاک بھارت سرحد پر قائم گردوارہ بھی سیاحوں کیلئے بند کردیا گیا تھا۔

پاکستان کی جانب سے کرتار پور کھولے جانے کے بعد پہلے دن مقامی سکھ یاتریوں نے مذہبی مقام کا دورہ کیا، اس موقع پر تمام ضروری احتیاطی تدابیر پر عمل کیا گیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق کرونا وائرس کے باعث کرتارپور گردوارہ میں حفاظتی اقدامات کے پیش نظر 200 سکھ یاتریوں کو دورے کی اجازت ہوگی، پیر، منگل اور بدھ کا روز پاکستانی یاتریوں کیلئے مختص کردیا گیا ہے جبکہ جمعرات، جمعہ ہفتہ اور اتوار کو بھارتی سکھ یاتری مذہبی مقام کا دورہ کرسکیں گے۔


About

Leave Comment

Skip to toolbar