Sunday , January 17 2021

سفیر ملا ضعیف کو پکڑ کر دشمن کے حوالے کیوں کیا ؟ سراج الحق کا سچ جاننے کے لیے ٹروتھ کمیشن قائم کرنے کا مطالبہ

اعتماد نیوز

لاہور: امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے قومی ٹروتھ کمیشن تشکیل دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجوزہ کمیشن ملک میں دہشتگردی جس کے نتیجہ میں 70 ہزار سے زائد پاکستانی شہید ہوئے اور ملکی معیشت کو 120ارب ڈالر سے زیادہ کا نقصان پہنچا اس کا جائزہ لے،کمیشن یہ بھی جائزہ لے کہ اسلامی تاریخ میں پہلی بار کسی سفیر کو پکڑ کر دشمن کے حوالے کیوں کیا گیا جس سے ملک کی بدنامی ہوئی اور پوری دنیا میں قومی وقار کو دھچکا لگا، قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو امریکہ کے حوالے کرنے کی وجوہات اور حقائق بھی جائزہ کمیشن کو قوم کے سامنے لانے چاہئیں تاکہ ملکی عزت و آبرو کا سودا کرنے والوں کا تعین کیا جاسکے ۔

سینیٹ میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اب وقت آگیاہے کہ ہم اپنی سابقہ کوتاہیوں کا جائزہ لیں اور آئندہ پاکستان کو کسی استعماری قوت کی خواہشات کی بھینٹ چڑھنے سے بچایا جاسکے ۔ اس بات کا بھی پتہ چلانا ضروری ہے کہ پاکستان کو آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کے قرضوں کے جال میں پھنسانے اور قوم کو عالمی صہیونی مالیاتی اداروں کی غلامی کی زنجیروں میں جکڑنے والوں کے اصل مقاصد کیاتھے ۔ پاکستان کا قومی سرمایہ کن کاموں میں صرف ہوتا رہا ۔

قومی خزانے کو لوٹنے اور قومی دولت لوٹ کر باہر منتقل کرنے والوں کو کھل کھیلنے کا موقع کس نے دیا ۔ انہوںنے کہاکہ قوم کے سامنے وہ تمام حقائق آنے چاہئیں جن کی وجہ سے آج ملک میں غربت ، جہالت ، مہنگائی اور بے روزگاری نے مستقل ڈیرے ڈال رکھے ہیں اور عام آدمی تعلیم اور صحت کی بنیادی سہولتوں سے محروم ہے ۔


About

Leave Comment

Skip to toolbar