Wednesday , July 15 2020

افریقی یونین دریائے نیل کے پانی کے بہاؤ پر جاری تنازع کو طے کرنے کے لیے ثالث کا کردار ادا کررہی ہے۔

سمجھوتے کو دو سے تین ہفتوں میں حتمی شکل دینے کے لیے اتفاق رائے ہوگیا ہے۔

قاہرہ (اعتماد نیوز)مصر، ایتھوپیا اور سوڈان دریائے نیل پر بڑے ڈیم کی تعمیر پر تنازع کو طے کرنے سے متعلق سمجھوتے کو دو سے تین ہفتے میں حتمی شکل دیں گے۔
میڈیارپورٹس کے مطابق ایتھوپیا کے آبی وسائل کے وزیر نے ہفتے کے روز افریقی یونین کی ثالثی میں مذاکرات کے بعد یہ خوش خبری سنائی ۔افریقی یونین ان تینوں ممالک کے درمیان دریائے نیل کے پانی کے بہاؤ پر جاری تنازع کو طے کرنے کے لیے ثالث کا کردار ادا کررہی ہے۔
واضح رہے کہ گذشتہ برسوں کے دوران میں طرطوس میں مذاکرات کے دوران میں مصر اور ایتھوپیا کا اپنے پڑوسی ملک سوڈان کے ساتھ اس ڈیم کی تعمیر پر کوئی سمجھوتا نہیں طے پاسکا تھا اور نہ ان میں یہ طے پایا تھا کہ ایتھوپیا اس ڈیم کو کیسے چلائے گا اور اس کے آبی ذخیرے کو کیسے بھرے گا۔ نیز مصر کی دریائے نیل سے پانی کی بہم رسانی کا کیسے تحفظ کیا جائے گا۔اس مسئلے کو حل کرنے کے لیے مذکورہ تینوں ممالک کے لیڈروں نے جمعہ کو افریقی یونین کے صدر ملک جنوبی افریقا کے صدر سیرل رامافوسا کے ساتھ آن لائن اجلاس میں تبادلہ خیال کیا ہے۔ ایتھوپیا کے آبی وسائل کے وزیر سلیشی بیکل نے ہفتے کے روز کہا ہے کہ سمجھوتے کو دو سے تین ہفتوں میں حتمی شکل دینے کے لیے اتفاق رائے ہوگیا ہے۔ایتھوپیا سوڈان کی سرحد سے قریباً 15 کلومیٹر ( نومیل) دور دریائے نیلا (بلیو) نیل پر عظیم ایتھوپیائی نشآ ثانیہ ڈیم (جرڈ) تعمیر کررہا ہے۔
ایتھوپیا کا کہنا ہے کہ چار ارب ڈالر مالیت کا پن بجلی کا یہ منصوبہ اس کی اقتصادی ترقی کے لیے ناگزیر ہے۔اس ڈیم سے 6450 میگا واٹ بجلی پیدا ہوگی۔ایتھوپیائی وزیراعظم کے دفتر کے ایک بیان کے مطابق ”تینوں ممالک نے اس بات سے اتفاق کیا ہے کہ نیل اور عظیم نشاة ثانیہ ڈیم افریقی مسئلے ہیں اور ان کا افریقی حل ہی نکالا جانا چاہیے۔
ایتھوپیا کے اس بیان میں مزید کہا گیا کہ افریقی یونین ،اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نہیں،مذاکرات میں شریک ممالک کی معاونت کرے گی اور انھیں فنی معاونت مہیا کرے گی۔اس تنازع کے ایک فریق مصر نے آخری سفارتی چارہ کار کے طور پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے یہ اپیل کی تھی کہ وہ ایتھوپیا کو ڈیم بھرنے سے روکے۔کونسل اس مسئلے پر غور کے لیے توقع ہے کہ آیندہ سوموار کو ایک اجلاس منعقد کرے گی۔


About

Leave Comment

Skip to toolbar