Saturday , October 24 2020

آکسفورڈ یونیورسٹی نے کورونا وائرس سے بچاﺅ کی ویکسین تیار کر لی.

کسی بھی کامیاب ویکسین تک تمام ممالک کی رسائی ہونی چاہیے ۔ عالمی ادارہ صحت

جنیوا ۔ ( اعتماد نیوز) عالمی ادار صحت (ڈبلیو ایچ او) نے آکسفورڈ یونیورسٹی کی تیار کی گئی کورونا وائرس سے بچاﺅ کی ویکسین کے مثبت نتیجہ کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لیے ابھی مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔ جینیوا میں ایک بریفنگ کے دوران عالمی ادارہ صحت کے ہنگامی حالتوں کے ڈائریکٹر ڈاکٹر مائیک ریان نے آکسفورڈ ویکسین کے تجربات میں شامل سائنسدانوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یہ ایک مثبت نتیجہ ہے لیکن ہمیں بہت دور تک جانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت دنیا میں ممکنہ طور پر 23 ویکسین بنائی جا رہی ہیں کیونکہ حقیقی دنیا کے ٹرائل بڑے پیمانے پر ہونے چاہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ٹیدروس ایڈہینوم گیبریئیسس نے بھی اس بات پر زور دیا کہ کسی بھی کامیاب ویکسین تک تمام ممالک کی رسائی ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے ممالک ویکسین کی تیاری کو ایک عالمی عوامی بہتری کی افادیت کے طور پر دیکھ رہے ہیں لیکن کچھ الٹ سمت میں جا رہے ہیں کیونکہ اگر کوئی اتفاقِ رائے نہیں ہوتا تو حقیقت میں یہ ان کی ملکیت ہو گی جن کے پاس پیسہ ہے اور جو اسے نہیں خرید سکتے یہ انہیں نہیں ملے گی۔ ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ ویکسین پر تحقیق جاری ہے، ہمیں اب زندگیاں بچانی ہیں اس لیے ہمیں ویکسین کی تیز تحقیق جاری رکھنی چاہیئے جبکہ جو آلات ہمارے پاس موجود ہیں ان سے مزید کچھ کرنا چاہیے۔


About

Leave Comment

Skip to toolbar